HADITH BOOKS

SAHIH BUKHARI (DARUSSALAM)

HADITHS BOOKS
2

صحیح بخاری – داود راز

SAHIH BUKHARI (DAWOOD RAAZ)

HADITHS BOOKS
3

صحیح مُسلم دار السلام

SAHIH MUSLIM (DARUSSALAM)

HADITHS BOOKS
4

صحیح مُسلم – وحید الزمان

SAHIH MUSLIM (WAHEED UZ ZAMAN)

HADITHS BOOKS
5

شمائل ترمذی امام ترمذی

SHAMAAIL TIRMIDHI IMAMTIRMIDHI

HADITHS BOOKS
6

جامع تِرمذی

JAMIA TIRMAZI MUTARJAM

HADITHS BOOKS
7

مصنف عبدُالرزاق

MUSANNAF ABDUL RAZZAQ

HADITHS BOOKS
8

مصنف ابنِ ابیِ شیبہ

MUSANNAF IBN E ABI SHAIBAH

HADITHS BOOKS
9

صحیح اِبنِ حِبان

SAHIH IBN HIBBAN

HADITHS BOOKS
10

مُسند ابو یعلیٰ

MUSNAD ABU YAALA ALMUSALI

HADITHS BOOKS
11

مُسند اِسحاق

MUSNAD ISHAQ

HADITHS BOOKS
12

مُسند احمد

MUSNAD AHMAD

HADITHS BOOKS
13

فضائلِ صحابہ – احمد اِبن حنبل

FAZAIL E SAHABA (AHMED BIN HANBAL)

HADITHS BOOKS
14

فَتِحُ البَاری

FATH-UL-BARI

HADITHS BOOKS
15

دَلاَئِل النُبُوَۃ

DALAIL-UN-NUBOWAH

HADITHS BOOKS
16

ادب الُمفرد

ADAB-UL-MUFRID

HADITHS BOOKS
17

انوارالصحیفہ (ضرب علی زئی حفظہ اللہ)

ANWARUL-SAHEEFA(ZUBAR ALI ZAI HAFIZAULLAH)

HADITHS BOOKS
18

مؤطااِمام مالِک

MU’ATA-IMAM-MALIK-URDU-(ONLINE-EDITION)

HADITHS BOOKS
19

MUSNAD-IMAM-SHAFI

HADITHS BOOKS
20

سنن درمی

SUNAN DARMI

HADITHS BOOKS
21

اللؤلُؤوَالمرجَان

AL LU LOO WAL MARJAAN

HADITHS BOOKS
22

المُعجُم الاَوسط طِبرانی

AL MU’JAM AL AWSAT

HADITHS BOOKS
23

المُعجُم کبِیر طِبرانی

MOAJAMUL KABEER TIBRANI

HADITHS BOOKS
24

المُعجُم صغِیرطِبرانی

MOAJAM UL SAGHEER TIBRANI

HADITHS BOOKS
25

مؤطااِمام مالِک

MOTA IMAM MALIK

HADITHS BOOKS
26

المُستدرِک حاکِم

MUSTADRAK HAKIM

HADITHS BOOKS
27

صحیح الترغِیب

SAHIH AL-TARGHEEB

HADITHS BOOKS
28

صحیح اِبنِ خزیمہ

SAHI IBNE KHUZAIMA

HADITHS BOOKS
29

شرح معَانی الآثار

SHARAH MA’ANI AL ASAAR

HADITHS BOOKS
30

شُعَب الایمان

SHUAB AL IMAAN

HADITHS BOOKS
31

السُنن الکُبریٰ بیہقی

SUNAN AL-KUBRA BEYHAQI

HADITHS BOOKS
32

السُنن دارقُطنی

SUNAN DAR AL-QUTNI

HADITHS BOOKS
33

السُنن الدارمی

SUNAN DARMI

HADITHS BOOKS
34

موضوعاتِ کبیر – مُلا علی قاری

MOUZUAT-E-KABEER BY MULLA ALI QARI

HADITHS BOOKS
35

نہج البلاغَہ

NAHJUL BALAGAH URDU

What is the reality of Muawiyah’s politics?

The politics of Muawiyah which resulted in wars during the time of Khilafah Rashida (Battle of Jamal and Battle of Safin and more than 2/3 wars)
And the Companions were martyred.


  The politics of Mu’awiyah resulted in the martyrdom of many of the Companions of the Rightly Guided Caliphate and for the first time the Ummah was divided into two parts.


As a result of Muawiyah’s politics, Imam Hassan (as) had to resign from the Khilafah.  So that the blood is not spoiled

,
  The ultimate and glorious result of Muawiyah’s politics was the reign of the accursed Yazid.


The politics that took place as a result of Muawiyah was the Hara in which Madinah Pak was trampled.  Masjid-e-Nabawi was trampled, more than 700 companions were martyred, 3000 innocent girls of Madinah were forcibly raped.


The Ka’bah was trampled on as a result of Muawiyah’s politics.  The Ka’bah was set on fire.  Stones were rained on the Ka’bah of Allah.


The politics of Mu’awiyah, in which the Ahl al-Bayt (as) were persecuted.


Long live the slogans of Muawiyah’s politics.  Curse a million times on those who chant and utter such slogans, and we declare our disgust with such politics of Muawiyah, we have not been convinced of such politics of Muawiyah from the first day and we are not convinced till today, nor will we ever be convinced.


Mentioning the Ahl al-Bayt (as) is as difficult today as it was in the times of Banu Umayyah and Banu ‘Abbas .There is the same opposition today, which is why Allah has promised a wonderful reward for the love of the Ahlul Bayt (as) in every age.
Congratulations to those pure hearts and pure minds who are still holding on to the love of Ahlul Bayt (as).
Curse on the enemies of the Prophet’s family
And curse the enemies of the companions of the Prophet.

سیاستِ معاویہ کی حقیقت کیا ھے۔؟؟

جس سیاستِ معاویہ کے نتیجے میں خلافت راشدہ کے دور میں جنگیں ھوئیں (جنگ جمل اور جنگ صفین ودیگر ۷۰/۸۰ سے زائد جنگیں)
اور صحابہ کرام رضی اللہ عنہ شہید کروائے گئے،
جس سیاستِ معاویہ کے نتیجے میں خلافت راشدہ حقہ کے خلاف خروج کرکے کئی صحابہ کرام رضی اللہ عنہ شہید کروائے گئے اور پہلی بار امت کو دو ٹکڑوں میں بانٹا گیا،
جس سیاستِ معاویہ کے نتیجے میں حضرت سیدنا امام حسن علیہ السلام کو خلافت سے دستبردار ھونا پڑا۔ تاکہ خون خرابہ نہ ھو،
جس سیاستِ معاویہ کا آخری اور شاندار نتیجہ یزید پلید ملعون کی حکمرانی کی صورت میں نکلا،
جس سیاست معاویہ کے نتیجہ کے طور پر واقع حرہ پیش آیا جس میں مدینے پاک کو پامال کیا گیا۔ مسجد نبوی کو پامال کیا گیا 700 سے زائد اصحاب کو شہید کیا گیا مدینہ کی3000ھزار معصوم بچیوں کے ساتھ باالجبر زنا کیا گیا،
جس سیاستِ معاویہ کے نتیجے میں کعبہ اللہ کو پامال کیا گیا۔ کعبۃ اللہ کو آگ لگائی گئی۔ کعبۃ اللہ پر پتھر برسائے گئے،
جس سیاستِ معاویہ کے افکار و نظریات میں اہلبیتِ اطھار علیہم السلام پر سب و شتم روا رکھا جاتا تھا،
اس سیاستٰ معاویہ کے زندہ باد کے نعرے لگاتے اور لگوات ھو۔ ایسے نعرے لگانے لگوانے اور کہنے والوں پر لاکھ بار لعنت،اور ایسی سیاست معاویہ سے ھم بیزاری کا اعلان کرتے ھیں، ھم ایسی سیاستِ معاویہ کے روز اول سے قائل نہ تھے اور نہ آج تک قائل ھیں، اور نہ ھی کبھی قائل ھوسکیں گے۔
اھلِبیتِ اطھار علیہم السلام کا ذکر جتنا بنوامیہ اور بنوعباس کے ادوار میں مشکل تھا آج بھی اتنا ھی مشکل کیا جارھا ھے اور اھلِبیت علیہ السلام کی جتنی مخالفت بنو امیہ اور بنو عباس کے ادوار میں تھی۔ آج بھی اتنی ھی مخالفت ھے ، یہی وجہ ھے کہ ھر دور میں اہل بیت علیہ السلام کی محبت پر اللہ نے شاندار اجر کا وعدہ فرمایا۔
مبارک ھو ان پاک قلوب اور پاک اذہان کو جو اس دور میں بھی محبت اہل بیتِ اطھار علیہم السلام کا دامن تھامے ھوئے ھیں۔
دشمنان آل رسولﷺپر لعنت ۔۔
اور دشمنان اصحاب رسولﷺ پر لعنت۔
المشتہ“ورلڈ سنی حسینی مشن،”