Taleemat e Ameer 59

** تعلیمات امیر (Taleemat e Ameer r.a)
** انسٹھواں حصہ (part-59)

پس علماء نے اس پر اتفاق کیا ہے کہ وہ بادشاہ عادل ہے جس کو حق تعالی جناب فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہ کی اولاد سے پیدا کرے گا اس وقت جب کی اس کی مشیت اور اس کو اپنے دین کی مدد کے لیے ظاہر فرمائے گا۔ علماء شیعہ کا خیال ہے کہ امام محمد
مہدی علیہ السلام امام حسن عسکری علیہ السلام کی اولاد ہیں جو دشمنوں کے خوف سے مخفی ہو گئے ہیں۔ ان کی درازی عمر میں حضرت نوح اور حضرت خضر علیہما السلام کی درازی عمر کے طرح کوئی استحالہ نہی ہے (اس قدر طویل عمر نا ممکن نہیں ہے) اس بات سے تمام دوسرے فرقوں کے علماء نے انکار کیا ہے اسی لیے کہ یہ دعوی ایک امر بعید ہے جس کی وجہ یہ ہے کہ اس امت محمدی صلی اللہ علیہ وسلم میں ایسی طویل عمر پانا دستور نہیں رہا ہے بغیر کسی دلیل اور علامت کے۔ اور امام محمد ابن حسن عسکری علیہ السلام کے اس قدر اخفا کے سلسلہ میں کوئی علامت اور دلیل مذکور نہیں ہے اور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے اس کے متعلق کوئی اشارہ بھی نہیں فرمایا ہے۔ اس انکار کی وجہ یہ بھی ہے کہ امام کا اتنے دنوں تک اس طرح پوشیدہ رہنا کہ نام کے سوا کچھ بھی ان کا ذکر مزکور نہیں ایک بعید از قیاس امر ہے اور یہ بھی دلیل ہے کہ اس پوشیدگی کے ہوتے امام کی بعثت بیکار ہو جاتی ہے کیونکہ امامت سے مقصود اقامت شریعت ہے اور ظلم کو دفاع کرنے والے انتظام کا قائم کرنا ہے۔ اسی طرح کے اور امور ہیں اگر اس کو تسلیم کر لیا جائے تو چاہئے تھا کہ ظاہر ہو جاتے ہاں امامت کا دعوی نہ کرتے جیسے تمام ائمہ اہل بیت تھے تاکہ اولیاء اللہ ان سے مدد و غلبہ حاصل کرتے اور سب لوگ نفع اٹھاتے اور یہ بات بھی ہے کہ یہ زمانہ تو ان کے ظہور کے لئے سب سے اچھا تھا کیونکہ یقینی بات ہے کہ آپ کی نیازمندی کے لئے عورتیں بچے اور بڑے چھوٹے بڑی جلدی کریں گے۔ واللہ اعلم۔

(📚 ماخذ از کتاب چراغ خضر)

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s