Musalman khud ek dusre ko halak karenge aur ek dusrey ko Qaid karenge

14064120_595015900703001_8552438530017172774_n-200x300

Hadith: Musalman khud ek dusre ko halak karenge aur ek dusrey ko Qaid karenge
——————————
Thauban radi allahu anhu se Rivayat hai ki Rasool-Allah sallallahu Alaihi wasallam ne farmaya Allah Subhanahu ne lapet liya zameen ko mere liye (yani sab zameen ko mere samne kar diya) to maine uska purab aur pachchim dekha aur meri hukumat wahantak pahuchegi jaha tak zameen mujhko dikhlayee gayee aur mujhko do khazane mile surkh aur safed aur maine Dua ki apne Allah se ki meri ummat ko ek hi martaba qahat se halak na karna aur un par kisi aise dushman ko musallat na karna jo sari ummat ko halak kar de ,

Mere Allah ne farmaya Eh Muhammed Sallallahu Alaihi Wasallam main jab koi hukm kar deta hun phir wo nahi palat-ta, aur maine Aapki ye Duayein qubul ki Main Aapki ummat ko Aam qahat se halak na karunga aur na un par kisi aise dushman ko musallat karunga jo sari ummat ko halak kar de chahey zameen ke tamam log iske liye ek saath ho jaye ( ki musalmano ko tabah karne ke liye lekin unko bilkul tabaah na kar sakege) yahan tak ki khud musalman ek dusrey ko halak karenge aur ek dusre ko Qaid karenge
Sahih Muslim, Vol 6, 7258
——————————
ایوب نے ابو قلابہ سے انھوں نے ابو اسماء سے اور انھوں نے حضرت ثوبان رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت کی، کہا: رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: بے شک اللہ تعالیٰ نے میرے لیے زمین کو لپیٹ دیا اور میں نے اس کے مشارق و مغارب کو دیکھ لیا اور جہاں تک یہ زمین میرے لیے لپیٹی گئی عنقریب میری امت کی حکومت وہاں تک پہنچے گی اور مجھے سرخ اور سفید دونوں خزانے (سونے اور چاندی کے ذخائر)دیے گئے اور میں نے اپنے رب سے اپنی امت کے لیے یہ سوال کیا کہ وہ اس کو عام قحط سالی سے ہلاک نہ کرے اور ان کے علاوہ سے ان پر کوئی دشمن مسلط نہ کرے جو مجموعی طور پر ان سب (کی جانوں)کو ہلاک کر دے ۔
بے شک میرے رب نے فرمایا: اے محمد صلی اللہ علیہ وسلم !جب میں کو ئی فیصلہ کردوں تو وہ رد نہیں ہوتا۔بلاشبہ میں نے آپ کی امت کے لیے آپ کو یہ بات عطا کردی ہے کہ ان کو عام قحط سالی سے ہلاک نہیں کروں گا اور ان پر ان کے علاوہ سے کسی اور دشمن کو مسلط نہ کروں گاجو ان سب (کی جانوں) کورواقراردے لے ۔چاہے ان کے خلاف ان کے اطراف والے ۔یا کہا: ان کے اطراف والوں کے اندر سے ہوں اکٹھے کیوں نہ ہوں جائیں ۔یہاں تک کہ یہ (خود)ایک دوسرے کو ہلاک کریں گے۔ اور ایک دوسرے کو قیدی بنائیں گے۔ –
صحیح مسلم جلد ٦ – ٧٢٥٨

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s